کوئی مائی کا لعل ختم نبوت کے معاملے کو نہیں چھیڑ سکتا،مولانافضل رحمن

جے یوآئی ف کے مرکز ی آمیر مولانا فضل رحمان نے کہاہے کہ اسلام یا اہل اسلام پر جب کہیں پر کڑا وقت اورآزمائش آیا ہے تب جے یوآئی ف اُس کے خلاف میدان میںآئی ہے اُنہوں نے کہا کہ حالیہ دنوں میں بھی چند افراد نے چور دروازے سے ختم نبوت کی شق میں رد وبدل کرنے کی مزموم سازش کی اور اللہ کی فضل وکرم سے ہم نے اُن کی اس سازش کو ناکام بناکر ختم نبوت کے شق کو 24گھنٹوں کے اندر اندر اپنی اصل حالت میں دوبار ہ بحال کیا اُنہوں نے کہا کہ فاٹا پر بعض لوگ اپنی سیاست چمکانے کی کوشش کررہے ہیں لیکن اُن کے فاٹا کے غریب عوام حالت سے کوئی سروکار نہیں ہے ان خیالا ت کا اظہار اُنہوں نے سوات کے گراسی گراؤنڈ میں سابق ایم این اے اور جے یو�آئی ف کے سابق امیر مرحوم مولانا قاری باعث کے یاد میں ایک کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا اُنہوں نے کہاکہ امریکہ اور دیگر مغربی قوتیں ہمیں دوستی کے آڑ میں اپنا غلام بنانا چاہتے ہیں لیکن ہم اُن کو یہ کہتے ہیں کہ ہم آپ سے برابری کے بنیاد پر دوستی کے لئے تیار ہیں لیکن ہمیں دوستی کے آڑ میں غلامی کسی صورت قبول نہیں ہے اُنہوں نے کہا کہ کوئی مائی کا لعل ختم نبوت کے معاملے کو نہیں چھیڑ سکتا اگرکسی نے ختم نبوت کے معاملے کو چھڑاتووہ اپنی موت کو دعوت دے گا ہم نے ملک کے اندر آمن کے لئے قربانیاں دی لیکن کچھ طبقے ہمارے ان قربانیوں کو تسلیم کرنے کے لئے تیار نہیں ہے ہم نے دہشت گردی کے خلاف نظریاتی بنیادوں پر جو قربانیاں دی ہے ہمارے کارکن شہید ہوئے ہیں ہمارے ان قربانیوں کا اعتراف ہونا چاہئے ہیں اُنہوں نے کہا کہ موجود حکومت نے پانچ سالہ دور میں صوبے کو ترقی کے بجائے پسماندگی کے طرف دھکیل دیا ہے اور تعلیم ،پولیس اور صحت اور دیگر محکموں میں انقلاب کے دعویداروں نے ان تمام محکموں کو تباہ وبرباد کیا ہے اور اس بات کا اعتراف اس پارٹی کے چیرمین یعنی عمران خان نے خود بھی کیا ہے اُنہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے دو ہی اچھے کام کئے ہیں جن میں ایک چوہے مار مہم چلائی ہے اور دوسرااُنہوں نے چائنا کے ساتھ گدھوں کی تجارت شروع کردی ہے باقی تو اُن کی کوئی خاص تبدیل دیکھنے کو نہیں مل رہی ہے اُنہوں نے کہاکہ یہ حکومت تو مساجد کے بجلی کے بل تو وصول کررہی ہے لیکن یہاں وہ یہود ہنود کے فنڈز سے امام مسجد کو تنخواہیں دینے کی باتیں کررہے ہیں اُنہوں نے کہا کہ بعض لوگ فاٹاکے مسئلے پر لانگ مارچ کی دھمکیاں دے رہے ہیں میں اُن کو بتادینا چاہتاہوں کہ اگر ہم نے مارچ شروع کردی تو پھر اسلام آبا دمیں تل دھرنے کو جگہ نہیں ملی گی اورسارا اسلام آباد بلاک کردینگے اُنہوں نے کہاکہ امریکہ انڈیا پاکستان میں سی پیک کو متنازعہ بنانے کے لئے ایک ہوگئے ہیں اور اس اہم منصو بے کو متنازعہ بنانے کی کوشش کررہے ہیں کچھ امریکی پاکستان کو دھمکیاں دے رہے ہیں اور میں نے جب کہا کہ پانامہ پاکستان کے خلاف ایک بین الاقوامی سازش ہے اور اس کے زریعے پاکستان کو غیر مستحکم کرنے کی سازش کی جارہی ہے اُنہوں نے کہا کہ پاکستان کے سالمیت پر کوئی آنچ نہیں آنے دینگے اور اس کا ڈٹ کا مقابلہ کرینگے اُنہوں نے کہا کہ ایشیاء اور پورے خطے کے ممالک بشمول انڈیا کو یورپ کے طرح ایک دوسرے کے ساتھ اچھے تعلقات استوار کرنے چاہئے تاکہ ہم بھی ترقی کے راستے پر گامزن ہواُنہوں نے کہا کہ پاکستان میں خوشحالی صر ف اور صرف نفاذ اسلام سے ممکن ہے ا س سے قبل کانفرنس سے جے یوآئی ف کے مرکزی سکرٹری جنرل عبدالغفورحیدری ،مرکزی ڈپٹی جنرل سکرٹری اکرم درانی ،صوبائی جنرل سکرٹری مولانا گل نصیب خان ،مولانا حمیداللہ دیروی ،سنیٹر راحت حسین ،قاری محمود اور ضلعی جنرل سکرٹری اسحاق ذاہد نے بھی خطاب کیا ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*